کسی بھی وقت 2 رکعت نماز نفل پڑھیں اور منٹوں میں ہر خواہش پوری

نفل نمازیں پڑھنے کا بہت ثواب ھے.. دن رات میں مکروہ اوقات کے علاوہ جتنی اور جب چاھے پڑھیں.. ان نفل نمازوں میں بعض بہت اھم ھیں جن کا پڑھنا بہت زیادہ ثواب کا باعث ھے جبکہ یہ تمام نمازیں بلکل ویسے ھی پڑھی جاتی ھیں جیسے آپ نماز پنجگانہ میں نفل پڑھتے ھیں..رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وبارک وسلم نے فرمایا.. “اللہ تعالی’ بندہ کے کسی عمل پر اتنا مہربان نہیں ھوتا جتنا کہ (نفل نماز) کی دو رکعتوں پر جن کو بندہ پڑھتا ھے اور تحقیق بھلائی (خیر و برکت ) چھڑکی جاتی ھے مزید تفصیلات کے لیے نیچے دئیے گے ویڈیو لنک پر کلک کریں

جب وضو کریں تو وضو کے بعد (جب کہ مکروہ وقت نہ ھو) دو رکعت نفل نماز تحیۃ الوضو کی نیت سے پڑھ لے.. غسل کے بعد بھی یہ پڑھی جاسکتی ھے..حضرت بلال رضی اللہ عنہ سے حضور اقدس صلی اللہ علیہ وآلہ وبارک وسلم نے دریافت فرمایا.. “تم کیا (ایسا نیک) عمل کرتے ھو..؟ میں نے (خواب میں) تمہاری جوتیوں کی آواز جنت میں سنی ھے اور (معلوم ھوتا تھا کہ) تم مجھ سے آگے آگے چل رھے ھو..”حضرت بلال رضی اللہ عنہ نے عرض کیا.. “یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وبارک وسلم ! دو کام میرا معمول ھیں.. ایک تو ھمیشہ باوضو رھتا ھوں.. جب (بھی) وضو ٹوٹتا ھے فورا” دوسرا وضو کرلیتا ھوں اور دوسرا کام یہ کہ جب بھی وضو کرتا ھوں تو دو رکعت نفل (نماز تحیۃ الوضو) پڑھ لیتا ھوں..”سبحان اللہ ! باوضو رھنے اور تحیۃ الوضو پڑھنے کی کتنی بڑی فضیلت ھے..نماز تحیۃ المسجد..جو شخص مسجد میں جاۓ تو بیٹھنے سے پہلے دو رکعت یا چار رکعت نفل نماز تحیۃ المسجد کی نیت سے پڑھ لے.. اگر ایک دن میں بار بار مسجد جانا ھو تو ایک ھی بار پڑھ لینا کافی ھے جبکہ مکروہ اوقات میں مسجد جائیں یا اگر آپ مسجد جائیں اور وقت اتنا کم ھو کہ تحیۃ المسجد پڑھنے کی صورت میں سنتیں (مؤکدہ ‘ غیرمؤکدہ) چھوٹ جانے کا ڈر ھو یا جماعت کھڑی ھوجاۓ تو تب تحیۃ المسجد چھوڑ دینی چاھیے.چاشت کی نماز کا وقت اشراقکی نماز کا وقت ختم ھونے سے لیکر نصف النہار تک ھے

Tags: 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*
*